بائیو کا پریکٹیکل دینے گئی بحریہ ٹاون اسلام آباد کی لڑکی کو ممتحن نے جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا


Faizul Hassan Posted on May 29, 2018

اسلام آباد:بحریہ ٹاؤن اسلام آباد کی لڑکی جب بائیو کا پریکٹیکل دینے گئی تو اس کو وہاں موجود پریکٹیکل لینے والے استاد نے جنسی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔

صبا علی کا اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر کہنا تھا کہ میرا بائیو کا پریکٹیکل 24 مئی 2018 کو ہوا میں پریکٹیکل دینے کے لیے ٹھیک 8 بجے پہنچ گئی ہر کسی نے مجھے بتایا کہ ممتحن بہت سخت ہے،لیکن یہاں پر اس سے بھی زیادہ عجیب بات تو یہ ہے کہ ہمارے ٹیچرز کو بھی پریکٹیکل لیب میں داخل ہونے کی اجازت نہ دی گئی،ہمارے ٹیچرز ہمیں ایک انجان مرد کے ساتھ اکیلا چھوڑنے کے لیے بالکل رضامند نہ تھے ۔

لڑکی کا مزید کہنا تھا کہ میرے پاس الفاظ نہیں ہیں کہ میں کس طرح سے بیان کروں،ممتحن سادات بشیر نے تقریبا 80 لڑکیوں کے ساتھ بدتمیزی کی،میں جب میں ماڈل کی پہچان کے لیے گئی تو اس نے میرے پرائیوٹ پارٹس کو ہاتھ لگایا اور بھی اس نے بہت کچھ کیا،پھر جب میں مینڈک کا معائنہ کرچکی تو اس نے مجھ سے پوچھا کہ یہ کونسا مینڈک تھا،مجھے بہت شرم آئی میں نے کہا یہ ایک نر مینڈک ہے،جس پر اس نے مجھے کہا کہ کیا تم اندھی ہو؟یہ ایک مادہ مینڈک ہے تمہیں اووریز نظر نہیں آرہیں،یہ وہی اووریز ہیں جو تمہارے اندر بھی ہیں۔